ڈاکٹر و ں نے حیران کن رپورٹ نیب کے حوالے کر دی

اسحاق ڈار کی نیب عدالت میں پیش کی جانے والی میڈیکل رپورٹ منظر عام پر آ گئی ہے۔ تفصیلات کے مطابق اسحاق ڈار کی 30 اکتوبر کی میڈیکل رپورٹ دو نومبر کو احتساب عدالت میں پیش کی گئی ۔ رپورٹ میں کہا گیا کہ اسحاق ڈار زیادہ دیر تک سفر نہیں کر سکتے۔ انہیں چار سے پانچ منٹ چلنے سے سانس چڑھ جاتا ہے۔ دو دن قبل اسحاق ڈار نے اپنے سینے پر بوجھ محسوس کیا تھا ، انہوں نے عمرہ کے دوران بھی سینے پر بوجھ محسوس کیا تھا ۔ اسحاق ڈار کی میڈیکل رپورٹ میں ان کی اینجیو گرافی کی سفارش کی گئی ہے۔ خیال رہےکہ ریفرنسز کیس میں احتساب عدالت نے اسحاق ڈار کو چودہ نومبر کو پیش ہونے کا آخری موقع دے رکھا ہے جبکہ اسحاق ڈار علاج کی غرض سے لندن میں مقیم ہیں۔

اسحاق ڈار کی نیب عدالت میں پیش کی جانے والی میڈیکل رپورٹ منظر عام پر آ گئی ہے۔ تفصیلات کے مطابق اسحاق ڈار کی 30 اکتوبر کی میڈیکل رپورٹ دو نومبر کو احتساب عدالت میں پیش کی گئی ۔ رپورٹ میں کہا گیا کہ اسحاق ڈار زیادہ دیر تک سفر نہیں کر سکتے۔ انہیں چار سے پانچ منٹ چلنے سے سانس چڑھ جاتا ہے۔ دو دن قبل اسحاق ڈار نے اپنے سینے پر بوجھ محسوس کیا تھا ، انہوں نے عمرہ کے دوران بھی سینے پر بوجھ محسوس کیا تھا ۔ اسحاق ڈار کی میڈیکل رپورٹ میں ان کی اینجیو گرافی کی سفارش کی گئی ہے۔ خیال رہےکہ ریفرنسز کیس میں احتساب عدالت نے اسحاق ڈار کو چودہ نومبر کو پیش ہونے کا آخری موقع دے رکھا ہے جبکہ اسحاق ڈار علاج کی غرض سے لندن میں مقیم ہیں۔

اسحاق ڈار کی نیب عدالت میں پیش کی جانے والی میڈیکل رپورٹ منظر عام پر آ گئی ہے۔ تفصیلات کے مطابق اسحاق ڈار کی 30 اکتوبر کی میڈیکل رپورٹ دو نومبر کو احتساب عدالت میں پیش کی گئی ۔ رپورٹ میں کہا گیا کہ اسحاق ڈار زیادہ دیر تک سفر نہیں کر سکتے۔ انہیں چار سے پانچ منٹ چلنے سے سانس چڑھ جاتا ہے۔ دو دن قبل اسحاق ڈار نے اپنے سینے پر بوجھ محسوس کیا تھا ، انہوں نے عمرہ کے دوران بھی سینے پر بوجھ محسوس کیا تھا ۔ اسحاق ڈار کی میڈیکل رپورٹ میں ان کی اینجیو گرافی کی سفارش کی گئی ہے۔ خیال رہےکہ ریفرنسز کیس میں احتساب عدالت نے اسحاق ڈار کو چودہ نومبر کو پیش ہونے کا آخری موقع دے رکھا ہے جبکہ اسحاق ڈار علاج کی غرض سے لندن میں مقیم ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں