کیو موبائل کمپنی کیا کررہی تھی ؟

پاکستانی کسٹم حکام نے حال ہی میں کراچی میں ایک کنٹینر پکڑا جس میں 64 ہزار کے قریب کیو موبائل کے فون اور ٹیبلٹس موجود تھے جو غیر قانونی طور پر پاکستان سمگل کئے گئے تھے۔کیو موبائل اپنے موبائل فون اور ٹیبلٹس ٹیکس کی ادائیگی کے بغیر سمگل کرتے ہوئے رنگے ہاتھوں پکڑی گئی۔

رپورٹ کے مطابق محسن، نہال اور جگنو نامی افراد ائیرپورٹ حکام کی ملی بھگت سے یہ موبائل فون سمگل کر کے اپنے منافع میں اضافہ کر رہے تھے۔۔۔ اور ٹیکس کی عدم ادائیگی سے قومی خزانے کو نقصان پہنچا رہے تھے۔ ان موبائل فونز کا نہ تو کوئی ریکارڈ ہے اور نہ ہی کوئی آئی ایم ای آئی نمبر ہے اور ان معلومات کے بغیر سی پی ایل سی اور دیگر سیکیورٹی ایجنسیاں موبائل نہ تو ان فونز کو ٹریس کر سکتی ہیں

بلکہ ان کے ذریعے ہونے والی رابطوں کی معلومات بھی حاصل نہیں کر سکتیں۔کنٹینر پکڑنے کے بعد یہ انکشاف ہوا کہ اس طرح کے تین مزید کنٹینرز کراچی میں چھپائے گئے ہیں اور ان میں بھی کیو موبائل کے فون اور دیگر آلات موجود ہیں۔ یہ کنٹینر ڈی جی کوم کے جیبل علی کی جانب سے منگوائے گئے کمپنی بند ہونے کا خدشہاور انہیں کے آئی سی ٹی کی جانب سے کلیئرنس دی گئی

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں